اسباب اور الحاد (Abu Yahya ابویحییٰ)

 

 

خدا کی دنیا اٹل قوانین پر چل رہی ہے۔ ہمیشہ سے چلتی رہی ہے۔ مگر پچھلے زمانے میں لوگ اسے دیوتاؤں اور بزرگوں کی کرشمہ سازی قرار دیتے رہے تھے۔ کوئی بارش کا دیوتا تھا تو کوئی روزی کا۔ کسی بزرگ کے ہاں سے اولاد ملتی تھی تو کوئی زندگی و موت کا مالک تھا۔ کسی کا فیض رزق بڑھاتا تھا تو کسی کی مدد ہر مشکل سے انسان کو نکال دیتی تھی۔

جدید سائنس نے آ کر ان سارے توہمات کا خاتمہ کر دیا۔ دنیا جن اصول و قوانین پر چل رہی ہے ان میں سے بیشتر معلوم ہو چکے ہیں۔ جتنا زیادہ سائنسی علم ترقی کر رہا ہے اتنا ہی انسان دنیا کے اسباب و قوانین کو سمجھ کر ان کو اپنے فائدے میں استعمال کر رہا ہے۔ اس کی ایک بڑی مثال میڈیکل سائنس کی ترقی ہے جس نے نجانے کتنی لاعلاج بیماریوں کا خاتمہ کر کے انسانی زندگی کو سکون اور آسانی سے بھر دیا ہے ۔

مگر اس صورتحال کا ایک دوسرا نتیجہ بھی نکلا ہے ۔ آج لوگ اسباب ہی کو سب کچھ سمجھ بیٹھے ہیں ۔ جس طرح قدیم انسان مخلوق کو سب کچھ سمجھ بیٹھے تھے۔ جدید انسان مخلوق کی ایک دوسری قسم یعنی اسباب کو سب کچھ سمجھ بیٹھے ہیں۔ وہ یہ نہیں سمجھتے کہ اسباب ہمیشہ فیض بخش نہیں ہوتے۔ تباہی بھی اسباب کے ہاتھوں آتی ہے۔ مگر حیرت انگیز طور پر سارے اسباب مل کر اس دنیا میں زندگی کا فیض جاری کر رہے ہیں ۔ سورج حرارت دیتا ہے ، مگر وہ کون ہے جس نے اسے زمین سے اتنا دور کر رکھا ہے کہ اس کی آگ زندگی بنی ہوئی ہے، مو ت نہیں ۔ ہوا سانس لینے کا ذریعہ ہے ، مگر کون ہے جو اس میں صرف اتنی آکسیجن رکھے ہوئے ہے جو زندگی بخش ہے ۔

یہی ہستی خدا کی ہستی ہے ۔ وہ اسباب کا خالق ہے ۔ اسی کا فیض ہے کہ اسباب نفع بخش ہیں ۔ یہی خدا کے ہونے کا سب سے بڑا ثبوت ہے ۔

۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔***۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔

 

 

Posted in ابویحییٰ کے آرٹیکز | Tags , , , , , , , , , , , , , , , , , , , , , , , , , , , , , , , , , , , , , , , , , , , , , , , , , , , , | Bookmark the Permalink.

2 Responses to اسباب اور الحاد (Abu Yahya ابویحییٰ)

  1. imtiazali says:

    Alhamdolillah you point out the basic problems in human thoughts which is taking us away from the True Source of all happenings in this world.but unfortunate thing with us is that we are never taught in our childhood to question, think and ponder on what we are told and what we see.we are taught to accept what the elders say. I learnt this lesson very late in life but it is never too late,i think it was the timing by the Creator for which i am thankful to Him.
    your books and articles have a different and wonderful way of presenting basis Truths.
    God bless you with more wisdom .Amin
    imtiazali

  2. محمد آصف says:

    بہت عمدہ سر

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *