اللہ کا فیصلہ (Abu Yahy ابویحییٰ)

 

 

میرے مضمون ’’عشق اور خوف‘‘ کے حوالے سے جس طرح اس ملک میں طریقہ ہے ، لوگوں نے اصل بات کو چھوڑ کرغیر متعلقہ باتیں شروع کر دیں ۔ اس لیے میں اپنا نقطہ نظر بالکل واضح کرنا چاہتا ہوں جو برسہا برس سے میں لکھتا رہا ہوں ۔ میں اس ملک میں قانون توہین رسالت کے نافذ ہونے کے حق میں ہوں۔ مگر میں اس کے سخت خلاف ہوں کہ گستاخی رسول کے فیصلے سڑکوں پر ہجوم کرے یا کوئی شخص قانون کو ہاتھ میں لے کر یہ فیصلہ خود کر دے ۔

اس کی وجہ یہ ہے کہ میں اپنے پس منظر کے اعتبار سے ایک بریلوی ہوں ۔ یہ جانتا ہوں کہ اس ملک میں گستاخی رسول کا اصل الزام غیر مسلموں پر نہیں بلکہ مسلمانوں کے بعض گروہوں یعنی اہل حدیث اور دیوبندیوں پر ہے۔ میں یہ جانتا ہوں کہ امام ابن تیمیہ سے لے کر شاہ اسماعیل اورمولانا نانوتوی سے لے کر مولانا اشرف علی تھانوی، ڈاکٹر اسرار سے لے کر مولانا مودودی، مولانا طارق جمیل سے لے کر مولانا جنید جمشید تک سب لوگ کسی نہ کسی پہلو سے گستاخ ، اسلام سے خارج اور کافر سمجھے جاتے ہیں ۔ ان کے خلاف فتوے موجود ہیں ۔بلکہ اب تو ہرشخص یوٹیوب پر جا کر یہ سب سن سکتا ہے اور دیکھ سکتا ہے ۔

ایسے میں انھی کے پیروکاروں کو قانون ہاتھ میں لینے کی حوصلہ افزائی کرتا ہوا دیکھ کر سمجھ میں نہیں آتا کہ کیا کہا جائے ۔ خداکا خوف دلا دلا کر تو میں تھک گیا ہوں ۔ اب یہی کہوں کہ اللہ سے نہیں ڈرتے تو بندوں ہی سے ڈرو۔ اس وقت سے ڈرو جب آپ لوگوں کے فیصلے بھی سڑکوں پر ہونے لگیں ۔ خدارا کسی کو تو ہوش سے کام لینا ہو گا۔ یہ جنون کب تک رہے گا؟

ہمارا کام سمجھانا ہے سمجھا رہے ہیں ۔ فیصلہ کرنا لوگوں کا کام ہے ۔ آپ فیصلہ کر لیں ۔ اس کے بعد اللہ بھی فیصلہ کریں گے۔ بس یاد رکھنے کی بات یہ ہے کہ ہم اس کے فیصلے کی تاب نہیں لا سکتے ۔

۔۔۔۔۔۔۔۔***۔۔۔۔۔۔۔۔۔

 

 

Posted in ابویحییٰ کے آرٹیکز | Tags , , , , , , , , , , , , , , , , , , , , , , , , , , , , , , , , , , , , , , , , , , , , , , , , , , , , , , | Bookmark the Permalink.

One Response to اللہ کا فیصلہ (Abu Yahy ابویحییٰ)

  1. Nadia Shoaib says:

    Dear Sir,

    Agree with your point of you. Jazak Allah khair & pray that we understand that law should not be taken by an individual or a society in their own hands.If we consider our selves as Muslims then we will have to abide by Holy Qur’an & Sunnah of Prophet Muhammad (S.A.W.W).

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *