بیلنس شیٹ ( Abu Yahya ابویحییٰ )

Download PDF

 

کاروباری اداروں میں نفع نقصان کا حساب رکھنے کے لیے کمپنی کی بیلنس شیٹ بنائی جاتی ہے۔ یہ بیلنس شیٹ بتاتی ہے کہ ادارے کے پاس کیا کچھ ہے، کیا لینا ہے اور اسے دوسروں کو کیا ادا کرنا ہے ۔ یہ بیلنس شیٹ متعدد مراحل سے گزر کر تیار ہوتی ہے جس میں کئی مرحلوں پر حساب کتاب رکھ کر تیار کیا جاتا ہے اور اسے دیکھ کر ایک لمحے میں یہ بتایا جا سکتا ہے کہ ادارہ مالی طور پر نفع میں ہے یا نقصان میں جا رہا ہے ۔

ہر ادارہ یہ اہتمام کرتا ہے کہ بیلنس شیٹ صحیح بنے ۔ کسی کمپنی میں یہ ممکن نہیں کہ حقیقت کچھ اور ہو اور اعداد شمار غلط ڈال کر بیلنس شیٹ تیار کی جائے۔ اثاثے لاکھ کے ہوں اور بیلنس شیٹ میں کوئی خوش فہم کروڑ لکھ دے۔ ادائیگیاں دس کروڑ کی کرنی ہوں اور غلط فہمی سے دس لاکھ کی لکھ دی جائیں ۔ یہ اگر کسی نے کیا تو اسے بدترین نقصان اٹھانا پڑے گا۔

بدقسمتی سے ہم میں سے بیشتر لوگ اپنے نامہ اعمال کی بیلنس شیٹ ایسی ہی غلط بیانیوں اور خوش فہمیوں کی بنیاد پر بناتے ہیں ۔ ہم ایسا جان بوجھ کر نہیں کرتے بلکہ قرآن مجید اور رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم کی سیرت کو معیار بنانے کے بجائے اپنے تعصبات کے تحت غلط فہمیوں اور اپنی خواہشات کے تحت خوش فہمیوں کا شکار ہوکر کرتے ہیں ۔ ہم ایمان، عدل، احسان اور انفاق کو بھول جاتے ہیں اور اپنے خود ساختہ معیارات پر ہر لمحہ اپنی بیلنس شیٹ میں ستر ہزار نیکیوں کا ثواب لکھتے رہتے ہیں ۔ ہم ظلم ، نا انصافی، حق تلفی اور الزام و بہتان کو چھوٹی چیز سمجھتے ہیں حالانکہ ان کی موجودگی ہمارے ہر عمل کو صفر کر کے ہمیں ابدی خسارہ سے دوچار کر دے گی۔

اپنے تعصبات اور خواہشات کو دین سمجھ کر بیلنس شیٹ میں ڈالنے سے نجات ممکن نہیں ۔ اس کے لیے ہمارے ہر عمل کو قرآن مجید کی کسوٹی پر پرکھنا اور سیرت طیبہ کے معیار پر تولنا ہو گا۔ اس کے بغیر ہم خود کو جو بھی سمجھیں ، قیامت کے دن ہماری بیلنس شیٹ صرف خسارہ دکھائے گی۔

_________***________

 

Posted in Uncategorized | Tags , , , , , , , , , , , , , , , , , , , , , , , , | Bookmark the Permalink.

3 Responses to بیلنس شیٹ ( Abu Yahya ابویحییٰ )

  1. sajjal says:

    thanks for reminder

  2. Hassaan Abid says:

    Thanks for sharing Sir . Its really such a great article.

  3. Amy says:

    Jazak Allah khair

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *