تقدیر اور اجر آخرت (Abu Yahya ابو یحییٰ)

Download PDF

 

اے ٹی ایم مشین سے پیسے نکال کر جیسے ہی وہ صاحب باہر نکلے خاتون فوراً اندر داخل ہو گئیں اور میں دیکھتا رہ گیا۔ ہوا یہ تھا کہ میں اے ٹی ایم مشین بوتھ کے پاس پہنچا تو وہ صاحب مجھ سے قبل اپنی باری کا نتظار کر رہے تھے ۔ وہ سائے میں کھڑے تھے۔ میں ان سے ذرا دور دوپہر کی تیز دھوپ میں کھڑا ہو کر انتظار کرنے لگا۔ اسی اثنا میں خاتون اپنے دو بچوں سمیت گاڑی سے اتر کر باہر نکلیں۔ ان کے قریب آنے سے قبل بوتھ خالی ہو گیا اور مجھ سے آگے کھڑے صاحب اندر چلے گئے ۔ خاتون قریب آئیں تو میں نے خود سائے میں جانے کے بجائے ان کو وہاں کھڑے ہونے کا موقع دے دیا۔ تاہم ان خاتون پر بھی یہ بات بالکل واضح تھی کہ اگلا نمبر میرا ہی ہے ۔

دھوپ میں انتظار کرتے ہوئے میں یہ طے کر چکا تھا کہ اب خود اندر جانے کے بجائے ان خاتو ن کو موقع دوں گا۔ مگر جب بوتھ کا دروازہ کھلا اورپیسے نکال کر وہ صاحب باہر نکلے خاتون فوراً اندر داخل ہوگئیں اور میں دیکھتا رہ گیا۔ مجھے افسوس ہوا۔ اپنے پیچھے رہ جانے پر نہیں۔ کیونکہ وہ تو میں پہلے ہی طے کر چکا تھا۔ افسوس ان کے پیچھے رہ جانے پرہوا۔ انھیں وہی ملا جو اللہ تعالیٰ انھیں میرے ذریعے سے دینے کا فیصلہ کر چکے تھے۔ مگر انھوں نے وہ اپنی چالاکی سے لینا چاہا۔ حق تلفی پر مبنی ایسی چالاکی انسان کو خدا کی نظر میں بہت پیچھے کر دیتی ہے ۔

اِسی مثال سے وہ قانون سمجھا جا سکتا ہے جس پراللہ تعالیٰ اس دنیا کو چلا رہے ہیں ۔ یہاں تمام فیصلے اللہ تعالیٰ خود کرتے ہیں۔ ان کے اسباب البتہ انسان جمع کرتے ہیں ۔ ان اسباب کو جمع کرتے ہوئے وہ اخلاقی اصولوں کو پامال کریں گے تو ایسا نہیں ہو گا کہ اپنی تقدیر سے کچھ زیادہ لے لیں گے۔ انھیں ان کی تقدیر ہی ملے گی، لیکن آخرت کی پکڑ کے ساتھ۔ اور جو لوگ اخلاقی اصولوں کی پاسداری کریں گے ۔ انھیں بھی ان کی تقدیر ہی ملے گی، مگر آخرت کے اجر کے ساتھ۔

۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔***۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔

 

Posted in ابویحییٰ کے آرٹیکز, اخلاقیات | Tags , , , , , , , , , , , , , , , , , , , , , , , , , , , , , , , , , , , , , , , , , , , , , , , , , , , , | Bookmark the Permalink.

2 Responses to تقدیر اور اجر آخرت (Abu Yahya ابو یحییٰ)

  1. kiran ahmad says:

    bohut umda bohut saada.

  2. Haroon Zafar says:

    آپ نے تقدیر کا معاملہ بڑے احسن انداز میں سمجھایا۔ اللہ آپ کے علم و عمل میں برکت عطا فرمائے۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *