خدا کی عطا (Abu Yahya ابو یحییٰ)

Download PDF

 

خدا اس دنیا کی سب سے بڑی حقیقت کا نام ہے۔ مگر عجیب بات ہے کہ بیشتر انسان اس حقیقت کو ماننے کے بجائے اس سے غافل رہ کر زندگی گزارتے ہیں۔ یہاں تک کہ ایک روز موت ان کی نگا ہوں کا پردہ اٹھا دیتی ہے اور وہ ایک ایسی دنیا میں داخل ہوجاتے ہیں جہاں خدا غیب سے ظاہر میں آ جاتا ہے ۔ مگر اس روز خدا کو ماننا بے معنی ہوجاتا ہے ۔

خدا اس دنیا کی ہر نعمت کا مالک ہے ۔ وہ ہر کمال کا خالق اور ہر جمال کا صانع ہے ۔ وہ ہر ذی روح کا رب اور وہ ہر شکل کا مصور ہے۔ اس نے سورج، چاند اور تاروں کو انسانوں کے لیے مسخر کر رکھا ہے۔ اس نے زمین وآسمان میں رحمتوں کے انبار لگا رکھے ہیں ۔ اس نے اپنے بندوں کے لیے جمال و کمال کی ایک ایسی دنیا بسا رکھی ہے جو معلوم کائنات میں کسی جگہ موجود نہیں ۔

یہی نہیں جو بندے اس کو دل سے مان کر خود کو اس کے حوالے کر دیں وہ غیب میں ہوتے ہوئے بھی ان کی ہمیشہ دستگیری کرتا ہے ۔ وہ سب کی سنتا ہے، مگر ان کی سن کر مان بھی لیتا ہے۔ وہ سب کی خبر رکھتا ہے، مگر ان کی خبرگیری بھی کرتا ہے ۔ وہ سب کچھ کرنے کی قدرت رکھتا ہے اور ان کے لیے واقعتا سب کچھ کربھی دیتا ہے ۔ وہ سب کو دیتا ہے مگر ان کو دیتا ہی چلا جاتا ہے ۔

لیکن امتحان کی دنیا میں وہ یہ سب کچھ پردہ غیب میں رہ کر کرتا ہے ۔ اس لیے اپنی رحمت کو ہمیشہ اسباب کے پردے اور تاخیر کے ڈھکنے میں ڈھانک کر انھیں دیتا ہے۔ اس لیے عام لوگوں کو یہ محسوس ہی نہیں ہو پاتا کہ وہ کس کے ساتھ کیا کر رہا ہے ۔

مگر ایک دن آئے گا جب وہ علانیہ اپنے بندوں کو نوازے گا۔ سب کے سامنے اور ان کی مرضی کے عین مطابق ان کو دے گا۔ خدا کی یہی شان عطا ہے جس کے لیے یہ دنیا اور آنے والی دنیا بنائی گئی ہے۔ قابل رشک ہیں وہ لوگ جنھوں نے خود کو اس کی عطا کا امیدوار بنا لیا ہے ۔

۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔***۔۔۔۔۔۔۔۔۔

 

 

Posted in Uncategorized | Tags , , , , , , , , , , , , , , , , , , , , , , , , , , , , , , , , , , , , , , , , , , , , , , , , , | Bookmark the Permalink.

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *