معذوری ( Abu Yahya ابویحییٰ )

Download PDF

 

ہم میں سے ہر شخص زندگی میں جب کبھی سخت بیمار ہوتا ہے تو وہ ایک نوعیت کی عارضی اور جزوی معذوری کے مرحلے سے گزرتا ہے۔ اس مرحلے میں ہم یہ اندازہ کرسکتے ہیں کہ مستقل اور مکمل معذوری کے ساتھ زندگی گزارنا کس قدر مشکل کام ہے۔ معذور کی مصیبت کو سمجھنے کا ایک اور ذریعہ کسی معذور شخص کو قریب سے دیکھنا اور اس کے ساتھ کچھ وقت گزارنا ہے۔ اس کے بعد ہی ہمیں اندازہ ہو سکتا ہے کہ اس دنیا میں معذوری سے بڑی مصیبت کم ہی ہوتی ہے ۔

دنیا میں کوئی بھی معذور نہیں ہونا چاہتا۔ مگر پھر بھی لوگ معذور ہوجاتے ہیں ۔معذوری سے متعلق ورلڈ ہیلتھ آرگنائزیشن کی ایک حالیہ رپورٹ کے مطابق دنیا بھر میں جزوی طور پر معذور ہوجانے والوں کی شرح پندرہ فیصد جبکہ مکمل طور پر معذور لوگوں کی شرح دو تا چار فیصد ہے ۔ یہ معذور لوگ سخت ترین حالات میں زندگی گزار کر رخصت ہوجاتے ہیں۔ تاہم کل قیامت کے دن جب یہ معذور لوگ اللہ کے حضور پیش ہوں گے تو ان کی معذوری قیامت کے دن ان کے لیے ایک عذر بن جائے گی۔ مالک دوجہاں ان کے ساتھ بہت نرمی اور درگزر کا معاملہ کر کے ان کے حق میں اپنی رحمت کا فیصلہ کر کے اپنے فضل سے نوازیں گے۔ اس کی وجہ یہ ہے کہ ان لوگوں کو اللہ تعالیٰ نے ایک ذریعہ بنا کر صحت مند لوگوں کو یہ پیغام دیا تھا کہ وہ کس درجے کی عافیت اور آسانی میں زندہ ہیں ۔

دوسری طرف ہمارے جیسے صحت مند اور صحیح و سالم لوگ جب اللہ کے حضور پیش ہوں گے تو ان کے پاس کوئی عذر نہ ہو گا۔ ان سے پوچھا جائے گا کہ انھوں نے اللہ تعالیٰ کی  کتنی  شکرگزاری کی۔ اس کی کتنی بندگی کی۔ اپنے اعضاء کو اس کی نافرمانی سے کتنا روکا۔ ہاتھ پاؤں ، گویائی اور بصارت، صحت اور عافیت کو بندوں کی مدد میں کتنا لگایا۔ نصرت دین کا کیا کام کیا۔ اس روز بہت سے صحت مند یہ خواہش کریں گے کہ کاش وہ معذور پیدا ہوتے۔ کاش وہ معذور ہی مرجاتے ۔

_________***________

Posted in ابویحییٰ کے آرٹیکز | Tags , , , , , , , , , , , , , , , , , , , , , , , , , , , | Bookmark the Permalink.

2 Responses to معذوری ( Abu Yahya ابویحییٰ )

  1. sana says:

    Wonderful

  2. Amy says:

    Jazak Allah khair

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *