Intelligent Design (Abu Yahya ابویحییٰ)

 

جدید علم الکلام میں خدا کے وجود کی سب سے بڑی دلیل انٹیلی جنٹ ڈیزائن کی ہے ۔ انٹیلی جنٹ ڈیزائن کا مطلب یہ ہوتا ہے کہ یہ کائنات ایک زندہ، باشعور اور ذہین خالق کی تخلیق ہے جس نے اس دھرتی پر کائناتی قوتوں کو اس طرح منظم کیا ہے کہ یہ زندگی کا گہوارہ بنی ہوئی ہے ۔ اس حوالے سے ایک صاحب کے کچھ اعتراضات ایک دوست نے مجھے بھیجے ۔ معترض کے بقول انسانی جسم میں جو بعض حیاتیاتی نقائص پائے جاتے ہیں ، ان کی بنا پر انٹیلی جنٹ ڈیزائن کا تصور غلط ثابت ہوجاتا ہے ۔ انھوں نے قرآن کی آیت ’’ہم نے انسان کو بہترین ساخت پر پیدا کیا ہے ‘‘ کو لیا اور ان نقائص کی روشنی میں ثابت کیا کہ یہ آیت اور انٹیلی جنٹ ڈیزائن کا تصور دونوں ہی غلط ہیں ۔

حقیقت یہ ہے کہ اس طرح کی باتیں سطحی انداز فکر کا نمونہ ہوتی ہیں۔ مثلاً اسی انٹیلی جنٹ ڈیزائن یا ’’بہترین ساخت ‘‘ کو لے لیجیے۔ انھوں نے بہت سطحی انداز سے اس کا مطلب پرفیکٹ یا ’’کامل‘‘ نکالا اور اپنی طرف سے کچھ نقائص بیان کر کے یہ سمجھ لیا کہ قرآن کی تردید ہوگئی۔ حالانکہ کسی چیزکا کامل ہونا بالکل الگ اور بہترین ہونا الگ ہوتا ہے۔ کامل کا مطلب بے عیب ہوتا ہے اور بہترین کا مطلب بے عیب نہیں ہوتا بلکہ دوسروں کے مقابلے میں بہتر ہونا ہوتا ہے ۔

انسانی جسم ہو یا اس کائنات میں کارفرما ڈیزائن ، کوئی یہ نہیں کہتا کہ وہ پرفیکٹ ہے ۔ بلاشبہ یہ کائنات ، انسانی جسم اور دیگر مخلوقات کئی پہلوؤں سے نانقص ہیں ۔ بلکہ ہمارا تو کہنا ہی یہی ہے کہ وہ آخرت کی دنیا ہو گی جو کامل ہو گی۔لیکن کیا کوئی اس حقیقت کا انکار کرسکتا ہے کہ اس دھرتی پر وہ سارے انتظامات کیے گئے ہیں جو اسے زندگی کا گہوارہ بنادیتے ہیں۔ یہ انتظامات ایسی متنوع اور متضاد طاقتوں کو ایک نظم میں لا کر کیے گئے ہیں جوعام حالات میں زندگی کے لیے زہر قاتل کی حیثیت رکھتی ہیں۔ اس حقیقت کا انکار کرنا سورج کا انکار کرنے کے مترادف ہے ۔

یہ کائنات، کرہ ارض، وجود انسانی ہر پہلو سے اس طرح بنایا گیا ہے کہ انسان زندہ رہتے ہیں اور کائنات کی ہر چیز ان کی زندگی کو برقرار رکھنے کے لیے سرگرم عمل ہے ۔ حالانکہ اپنی حقیقت کے اعتبار سے یہ کائنات ایک قاتل کائنات ہے جو اپنی اصل میں زندگی کی ہر شکل کے لیے موت کا پیغام ہے ۔ مثلاً اس کرہ ارض کے علاوہ کائنات میں ہر جگہ درجہ حرارت اتنا زیادہ یا اتنا کم ہے کہ زندگی ایک لمحہ میں ختم ہوجائے گی۔ مگر ایک خالق نے اس دھرتی پر کائناتی قوتوں کو اس طرح منظم کیا ہے کہ ہر چیز حیات بخش ہو چکی ہے۔ اسی کو انٹیلی جنٹ ڈیزائن کہا جاتا ہے۔ موجود ہ حالات میں بلاشبہ یہ بہترین انتظام ہے ، گرچہ یہ بعض پہلوؤں سے کامل نہیں۔ تاہم اس غیر کاملیت کی بھی اپنی حکمت ہے ، لیکن یہ ایک الگ موضوع ہے ۔

حقیقت یہ ہے کہ یہ کائنات اپنی ذات میں اپنے خالق کا تعارف ہے جو کتاب ہستی کے ہر ورق پر لکھا ہے ۔ لیکن یہ ورق غور وفکر کرنے والے ہی پڑھ سکتے ہیں۔ سرسری انداز سے دیکھنے والے نہیں ۔

۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔***۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔

Posted in ابویحییٰ کے آرٹیکز | Tags , , , , , , , , , , , , , | Bookmark the Permalink.

4 Responses to Intelligent Design (Abu Yahya ابویحییٰ)

  1. noshaba says:

    Indeed

  2. anonymous says:

    true. as it is said that this world is made on the rules of tests, not on the rules of perfection…

  3. Gulrayz says:

    Very well said . Thanks.

  4. Amy says:

    Jazak Allah khair

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *